لیفٹننٹ جنرل فیض حمید کا وزیرستان کا دورہ

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

لیفٹننٹ جنرل فیض حمید نے دورہ وزیرستان کے موقع پر اتمانزئی مشران کے ساتھ گرینڈ جرگہ میں افغانستان سے متاثرین کی واپسی، دوطرفہ تجارت بڑھانے اور انڈسٹریز بنانے سمیت علاقے کے دیگر مسائل پر بات کی۔

گیارہ کور کی کمان سنبھالنے کے بعد لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید کا وزیرستان کا یہ پہلا دورہ ہے۔ وزیرستان آمد پر کور کمانڈر نے میران شاہ میں اتمانزئی مشران کے ساتھ گرینڈ جرگہ بھی کیا۔ اس موقع پر جی او سی 7 ڈویژن میجر جنرل نعیم اختر، ڈپٹی کمشنر شاہد علی خان اور ڈی پی او عقیق حسین بھی جرگے میں موجود تھے۔

جرگے سے خطاب میں اتمانزئی مشران نے افغانستان سے متاثرین کی واپسی، دوطرفہ تجارت بڑھانے، انڈسٹریز بنانے کا مطالبہ کیا۔ مشران نے مسمار شدہ بازاروں کے معاوضوں کی ادائیگی، یونیورسٹی اور کیڈٹ و میڈیکل کالجز کے قیام کا بھی دیرینہ مطالبہ دہرایا۔

ملاقات میں کور کمانڈر پشاور لیفٹننٹ جنرل فیض حمید نے اتمانزئی مشران کے مطالبات کو پورا کرنے کی یقین دہانی کرائی۔ لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید کا کہنا تھا کہ علاقے میں امن و امان کا قیام، ترقی اور خوشحالی فوج اور حکومت کی اولین ترجیحات ہیں۔

کور کمانڈر کے مطابق ترقیاتی منصوبوں، تجارت اور تعلیم کو فروغ دیکر علاقے میں ترقی اور خوشحالی کا نیا باب شروع ہوگا۔ کور کمانڈر نے مشران پر نوجوانوں کو تعلیم اور روزگار کی طرف راغب کرنے پر زور دیا۔ اتمانزئی مشران نے میران شاہ کا دورہ کرنے پر کور کمانڈر پشاور کا شکریہ ادا کیا۔

جرگے میں شریک اتمان زئی مشران کا کہنا تھا کہ لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید کے دورے سے علاقے میں خوشحالی اور ترقی کے نئے دور کا آغاز ہوگا۔