انسداد پولیو: نیشنل ایمرجنسی ایکشن پلان 23-2022 منظور

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت پولیو کے خاتمے کے لیے ٹاسک فورس کے اجلاس میں نیشنل ایمرجنسی ایکشن پلان 23-2022 کی منظوری دے دی گئی، وزیر اعظم نے پولیو کے خاتمے میں مدد کے لیے عالمی اداروں ڈبلیو ایچ او، یونیسف، بل گیٹس فاؤنڈیشن اور دیگر سے اظہار تشکر کیا۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت پولیو کے خاتمے کے لیے ٹاسک فورس کا اجلاس منعقد ہوا، ٹاسک فورس نے نیشنل ایمرجنسی ایکشن پلان 23-2022 کی منظوری دے دی۔

وزیر اعظم نے پولیو کے خاتمے کے لیے صوبائی صحت کے محکموں کے کردار کو سراہا، انہوں نے عالمی اداروں ڈبلیو ایچ او، یونیسف، بل گیٹس فاؤنڈیشن اور دیگر سے اظہار تشکر بھی کیا۔

وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ پاکستان پولیو کے خاتمے کے لیے کوششیں جاری رکھے گا، صوبے مثبت نتائج کے لیے روابط کو مزید مضبوط بنائے۔

یاد رہے کہ رواں برس ملک میں اب تک صرف ایک پولیو کیس رپورٹ ہوا ہے جو بلوچستان میں سامنے آیا، اس کے برعکس سال 2020 میں ملک میں 84 پولیو کیسز رپورٹ ہوئے تھے۔

گزشتہ برس کرونا وائرس کی وجہ سے پولیو مہمات متاثر ضرور ہوئیں تاہم اس کے بعد انسداد پولیو کی نئی حکمت عملی اپنائی گئی جس کے بعد سے صورتحال میں نمایاں بہتری آئی.

رپورٹ کے مطابق نئی انسداد پولیو حکمت عملی کورونا کی پہلی لہر کے بعد تیار کی گئی تھی، پولیو کی پہلی لہر کے بعد ملک میں بھرپور انسداد پولیو مہم چلائی گئی تھیں۔

پہلی لہر کے بعد روٹین ایمونائزیشن پر خصوصی توجہ دی گئی، سیکیورٹی فورسز کے تعاون سے دور دراز علاقوں میں روٹین ایمونائزیشن پرتوجہ دی گئی جبکہ انسداد پولیو ٹیکے کی دوسری ڈوز سے بچوں کی قوت مدافعت میں نمایاں اضافہ ہوا۔