ایرانی چیف آف جنرل سٹاف کی جوائنٹ سٹاف ہیڈکوارٹر آمد

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے ایرانی چیف آف جنرل اسٹاف نے ملاقات کی ہے جس میں علاقائی امن ‏کے فروغ اور انسداددہشت گردی کیلئے مل کر کوششیں کرنے پر اتفاق کیا گیا ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق ایرانی چیف آف جنرل اسٹاف نے جی ایچ کیو راولپنڈی کادورہ کیا اور آرمی چیف جنرل ‏قمر جاوید باجوہ سے ملاقات کی۔ ملاقات میں باہمی دلچسپی اور افغانستان کی صورتحال پرتبادلہ خیال کیا گیا۔

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ ملاقات میں علاقائی سیکیورٹی اورپاک ایران بارڈرمینجمنٹ پر گفتگو اور دونوں ‏جانب سے دفاعی تعاون کومزیدفروغ دینےپراتفاق کیا گیا۔

ایرانی چیف آف جنرل اسٹاف نے فوجی رابطوں کوفروغ دینےکی خواہش کا اظہار کرتے ہوئے علاقائی امن ‏کے فروغ، انسداددہشت گردی کیلئےمل کرکوششیں کرنےپراتفاق کیا۔

ایرانی چیف نے کہا کہ انسداددہشت گردی اور تربیتی امور میں بھی تعاون ناگزیر ہے جب کہ آرمی چیف جنرل ‏باجوہ نے کہا کہ پاکستان اورایران کاقریبی تعاون خطےمیں امن واستحکام کیلئےاہم ہے۔

ایرانی وفد کو علاقائی سیکیورٹی اور آپریشنل امور پر بریفنگ دی گئی اور ساتھ ہی ایرانی وفد کو پاک فوج تربیتی ‏امور اور دوست ممالک کیساتھ تعاون پر آگاہ کیاگیا۔

وزیراعظم سے ایرانی چیف آف جنرل اسٹاف کی ملاقات

وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ پاک ایران امن اور استحکام سےافغانستان کا براہ راست تعلق ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران سے ایران کے آرمی چیف نے وزیراعظم ہاؤس میں ملاقات کی، ملاقات میں پاک ایران دوطرفہ تعلقات کے فروغ پر تبادلہ خیال کیا گیا، ملاقات میں وزیراعظم نے دونوں ملکوں کے درمیان تجارتی،معاشی،توانائی میں تعاون کوبڑھانےکےعزم کا اعادہ کیا۔

ملاقات میں دونوں اطراف کی سیکیورٹی بڑھانے اور سرحد پرمارکیٹس کےقیام کےمعاہدے پر بھی بات چیت کی گئی، وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پاک ایران سرحد امن اوردوستی کی سرحد ہے، مارکیٹوں سےخطے میں روزی روٹی میں آسانی ہوگی۔

ایرانی آرمی چیف سے ملاقات میں وزیر اعظم عمران خان نے مقبوضہ کشمیر کے تنازع پر ایران کے مثبت کردار کو سراہا۔

وزیراعظم ہاؤس میں ہونے والی ملاقات میں افغانستان میں تازہ ترین صورتحال پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا، وزیراعظم نے کہا کہ پاک ایران امن اور استحکام سےافغانستان کا براہ راست تعلق ہے، پاکستان پرامن افغانستان اور پائیدارمعیشت کا خواہشمند ہے، افغانستان میں عالمی برادری مثبت طورپراپنا کردارادا کرے۔

وزیراعظم پاکستان نے کہا کہ افغانستان میں معاشی تباہی کو روکنے کیلئےعالمی برادری کو اقدامات کرنے چاہیے۔

ملاقات میں وزیراعظم نے پاکستان اور ایران کےدرمیان قریبی ہم آہنگی پر بھی زوردیا اور ایرانی صدر ابراہیم رئیسی کےلیےنیک تمناؤں کا اظہارکیا، ملاقات میں وزیراعظم نےایرانی صدر کو پاکستان کے دورے کی دعوت کو دہرایا۔