پشاور- کراچی ریلوے لائن ایم ایل ون منصوبہ مزید تاخیر کا شکار

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

سی پیک اسٹریٹیجک ایم ایل ون منصوبہ تاخیر کا شکار ہوگیا۔

کراچی پشاور ریلوے لائن اپ گریڈیشن منصوبے میں مزید تاخیر کا خدشہ ہے کیونکہ رواں مالی سال بھی ایم ایل ون پر کام شروع کرنے کے امکانات معدوم ہوگئے ہیں۔

ذرائع کے مطابق رواں مالی سال کے حکومتی اہداف میں ایم ایل ون کا سنگ بنیاد شامل ہی نہیں اور حکومت نے آئندہ سال 2022-23 میں ایم ایل ون کا سنگ بنیاد رکھنے کا ہدف مقرر کرلیا۔

ایکنک کی جانب سے ایم ایل ون کی منظوری کو ایک سال سے زائد کا عرصہ ہوچکا اور پاکستان چین دونوں ممالک نے منصوبے کیلئے قرض کی شرائط و ضوابط کا مسودہ بھی تیار کیا ہے جس پر جلد اتفاق کا امکان ہے ۔

رپورٹ کے مطابق اتفاق رائے کے بعد ایم ایل ون منصوبے کا ٹینڈر جاری کیا جائے گا۔

ایم ایل ون منصوبہ تین مختلف مراحل میں مکمل کرنے کی تجویز ہے۔ پہلے مرحلے میں 2 ارب 40 کروڑ ڈالر کا پیکیج ون مکمل کرنے اور اس میں خیبر پختونخواہ کو شامل نہ کرنے کی تجویز ہے۔

رپورٹ کے مطابق پیکیج ون میں زیادہ ٹریفک والے جنکشن کو شامل کرنے کی تجویز ہے۔

ایم ایل ون منصوبے کی لاگت کا تخمینہ 6 ارب 80 کروڑ ڈالرز ہے جس میں سے 85 فیصد چین اور 15 فیصد فنڈز پاکستان دیگا۔