خیبر پختونخوا کابینہ میں خاتون رکن شامل کرنے کے لیے نیلوفر بختیار متحرک

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

خیبر پختون خوا کابینہ میں خاتون ممبر شامل کرنے کے لیے نیلوفر بختیار متحرک ہو گئی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کے پی کابینہ میں خاتون ممبر اسمبلی کو شامل کرنے کے لیے نیشنل کمیشن فار اسٹیٹس آف وومن کی چیئرپرسن نیلوفر بختیار متحرک ہوگئیں۔

خیبر پختونخوا میں 2013 سے پاکستان تحریک انصاف برسر اقتدار ہے، گزشتہ دور حکومت میں کابینہ میں کوئی خاتون شامل نہیں تھی، اور 2018 میں دوبارہ اقتدار میں آنے کے بعد بھی اب تک کسی خاتون ممبر کو کابینہ میں نمائندگی نہیں دی گئی۔

دورہ پشاور کے موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے نیلوفر بختیار نے بتایا کہ خیبر پختونخوا اسمبلی کی خواتین ایم پی اے بہت باصلاحیت ہیں، ان کو کابینہ میں نمائندگی ملنی چاہیے.

انہوں نے کہا ہے کہ وزیر اعلیٰ محمود خان سے ملاقات میں کابینہ میں خاتون ممبر شامل کرنے کے لیے سفارش کروں گی۔

چیئرپرسن نیشنل کمیشن فار وومن نے بتایا کہ خیبر پختونخوا کو بااختیار بنانے کے لیے وفاقی اور صوبائی سطح پر اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں، صرف خیبر پختونخوا میں نہیں، پورے ملک میں خواتین کو کسی نہ کسی صورت مسائل درپیش ہیں.

انہوں نے کہا ہے کہ اب کابینہ میں خاتون رکن کو شامل کرنے کے لیے اب بھر پور حل کرنے کے لیے سنجیدگی سے اقدامات ہو رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ خواتین کے حقوق کے لیے کام کرنے والے محکموں کو متحرک ہونا ہوگا، تب ہی مسائل حل ہوں گے، ضم اضلاع شدہ کے خواتین کو بھی بنیادی حقوق ملنے چاہیئں، اس کے لیے بھی کوششیں جاری ہیں۔