قبائلی ضلع خیبر کے نجی سکولوں کے اساتذہ کا درس و تدریس سے بائیکاٹ

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

قبائلی ضلع خیبر کے دور افتادہ علاقے تیراہ میں مستقل تعیناتی نہ ہونے پر نجی سکولوں کے اساتذہ نے درس و تدریس سے بائیکاٹ کا اعلان کردیا۔

باڑہ پریس کلب میں تیراہ میدان سکولز ایسوسی ایشن کے جنرل سیکرٹری فضل بادشاہ ودیگر کا پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ تیراہ میں 2013 کے اپریشن کے بعدجب علاقہ کلیئر ہوا تو سول و عسکری انتظامیہ کے وعدے پر تعلیمی خدمات شروع کیں کہ انکو مستقل بنیادوں پر تعینات کیا جائے گا تاہم 6 سال گزرنے کے باوجود ابھی تک حکومت اپنا وعدہ پورا نہ کر سکی اور ہمیں مستقل نہیں کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ کمزور مالی حالت کی وجہ سے بچوں سے کوئی فیس نہیں لے رہے جبکہ عرصہ دراز سے بغیر تنخواہ لئے ڈیوٹی دے رہے ہیں۔

فضل بادشاہ کے مطابق تیراہ میں 27 پرائیوٹ سکولز میں 220 اساتذہ 12 ہزار تک طلباء کو تعلیم دے رہے ہیں تاہم بائیکاٹ سے تمام طلباء تعلیم سے محروم ہو رہے ہیں۔

انہوں نے الزام عائد کیا کہ تیراہ میں 36 سرکاری سکولز تعمیر ہو چکے ہیں جن میں صرف 7 اساتذہ ڈیوٹی سرانجام دے رہےہیں۔

تیراہ ٹیچرز ایسوسی ایشن نے خبردار کرتے ہوئے کہا کہ اگر حکومت یکم اکتوبر تک ہمارے مطالبات بارے عملی اقدامات نہیں کرتی تو طلباء, والدین اور قومی مشران سمیت گورنر ہاؤس اور وزیر اعلٰی ہاؤس کے سامنے دھرنا دیں گے۔