قبائلی ضلع خیبر میں باڑہ گھی مل کا دوبارہ افتتاح

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

چیف سیکرٹری خیبر پختونخواہ سلیم خان نے قبائلی ضلع خیبر کی تحصیل باڑہ میں باڑہ گھی مل کا افتتاح کر دیا۔

نمائندہ ٹی این این کے مطابق تحصیل باڑہ میں ڈوگرہ کے مقام پر دہشت گردی کی وجہ سے بند گھی مل کو 15سال بعد کھول کر اسکا باقاعدہ افتتاح کیا گیا۔

باڑہ گھی مل کے مالک حاجی نثار آفریدی کے مطابق مل سے سالانہ کروڑوں روپے حکومت کو ٹیکس کی مد میں ملتے جبکہ 200 سے زائد خاندانوں کو روزگار بھی مہیا کیا گیا تھا۔

افتتاحی پروگرام میں سینیٹر الیاس بلور, ایم این اے حلقہ این اے 44 اقبال آفریدی, چیمبر آف کامرس پاکستان کے سابقہ صدر غضنفر بلور اور سکیرٹری ایم این اے حامد نعیم نے بھی شرکت کی۔

اس موقع پر چیف سیکرٹری کا کہنا تھا کہ خیبر پختونخواہ میں انضمام سے پہلے قبائلی اضلاع کیلئے تقریباً 24ارب روپے سالانہ فنڈ ہوتا تھا جبکہ اب سالانہ ایک سو ارب سے زیادہ رکھے گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ قبائلی اضلاع میں دس سالہ پروگرام میں سوشل سیکٹر میں کام کریں گے جبکہ قبائلی اضلاع میں بے تحاشہ ریسورسز موجود ہیں جن پر کام کرکے علاقے میں بہتری لا سکتے ہیں۔

چیف سیکرٹری نے کہا کہ ضلع خیبر ھب بنے گا کیونکہ عمران خان کے دورے کے بعد طورخم بارڈر چوبیس گھنٹے کھلا رہیگا جہاں سے اب دو گنا زائد تعداد میں گاڑیاں گزر سکیں گی۔

سلیم خان نے کہا کہ حکومت قبائلی اضلاع میں ڈیڑھ ارب روپے کے مائیکرو فنانس سکیمیں شروع کروا کر رہی ہے جن سے بلا سود قرضہ اور روزگار کے مواقع ملیں گے۔

انہوں نے کہا کہ قبائلی اضلاع میں انڈسٹریز زونز بنائے جائیں گے جن میں مقامی لوگوں کو بے روزگاری سے بچایا جاسکے گا۔

افتتاح کے موقع پر کارخانہ داروں نے حکومت سے گیس کی فراہمی کا مطالبہ کردیا۔