سردار عطاء اللہ مینگل کی وفات، سیاسی رہنماؤں کے تعزیتی بیانات

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

بلوچستان نیشنل پارٹی کے رہنماء سردار عطاء اللہ مینگل کی وفات کے بعد ملک کی مختلف سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں کی جانب سے تعزیتی بیانات سامنے آرہے ہیں۔

بلوچستان نیشنل پارٹی نے اپنے مرکزی بیان میں بی این پی رہنماء کی رحلت پر پارٹی کی جانب سے 40 روزہ سوگ کا اعلان کیا ہے اور کہا ہے کہ سوگ کے دوران پارٹی پرچم سر نگوں رہے گا۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ بلوچستان کے عوام ایک عظیم شخصیت، ثابت قدم اور مستقل مزاج عظیم انسان سے محروم ہوگیا، یہ خلاء صدیوں میں بھی پورا نہیں ہوسکے گا۔

پارٹی کے مرکزی اعلامیہ میں انہیں زبردست خراج عقیدت خراج تحسین پیش کیا گیا۔ بیان میں کہا گیا کہ 03 ستمبر بروز جمعہ سہ پہر 3 بجے ان کے آبائی گاؤں وڈھ میں بزرگ سیاستدان سردار عطاء خان مینگل کی نماز جنازہ ادا کیا جائے گی۔

پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے بزرگ سیاستدان سردار عطاء اللہ مینگل کے انتقال پر گہرے دکھ و افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ بزرگ سیاستدان کے انتقال کی خبر باعثِ صدمہ ہے۔

بی این پی رہنماء کے انتقال سے پاکستان میں تدبر، رواداری اور پروقار سیاست کا ایک عہد اختتام پذیر ہوا۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ سردار عطاء اللہ مینگل کی بلوچستان کے حقوق اور جمہوریت کے لئے طویل جدوجہد ہماری تاریخ کا ناقابل فراموش باب ہے۔

گورنر بلوچستان سید ظہور آغا، وزیراعلیٰ جام کمال خان اور اسپیکر بلوچستان اسمبلی میرعبدالقدوس بزنجو نے بزرگ قوم پرست رہنماء سردار عطاء اللہ مینگل کی خدمات پر انہیں خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ بلوچستان ایک زیرک اور دور اندیش سیاستدان سے محروم ہوگیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ بحیثیت وزیراعلیٰ سردار عطاء اللہ مینگل کی خدمات ہمیشہ یاد رکھی جائیں گے۔

ان کے علاوہ ڈپٹی اسپیکر سردار بابر موسیٰ خیل، نیشنل پارٹی کے سربراہ ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ، پاکستان تحریک انصاف کے پارلیمانی سربراہ سردار یار محمد رند، عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر اصغر خان اچکزئی، سابق گورنر بلوچستان نواب ذولفقار علی مگسی اور دیگر معروف رہنماؤں نے بھی تعزیتی بیانات دیئے ہیں۔