باڑہ میں پانی کو ذخیرہ کرکے ضائع ہونے سے بچا لیا

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

ضلع خیبر کے تحصیل باڑہ میں پینے اور گھریلوں استعمال کے صاف پانی کو ذخیرہ کرنے کیلئے واٹر ٹینکیاں لگائی گئی۔ تحصیل باڑہ کے مختلف دور دراز علاقوں جن میں قبیلہ ملک دین خیل میں ناویہ کمر, قبیلہ کمر خیل میں چٹوان کلے,حاجی یاقوت کلے, لنڈے اور بازگھڑا جبکہ قبیلہ سپاہ میں غیبی نیکہ, خیو سر کلے شامل ہیں ان میں فرنٹیئر کور محسود سکاؤٹس کے کمانڈنٹ کی طرف سے 6 عدد پلاسٹک کی ٹینکیاں لگائی گئی۔

مشال سوشل ویلفیئر آرگنائزیشن کے چیئرمین ڈاکٹر عبدالوہاب نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ پہاڑوں پر اونچے چشمے ہیں جن سے ایف سی محسود سکاؤٹس کے حکام نے علاقائی لوگوں کیلئے پائپس لگائے ہیں تاہم پانی کو ذخیرہ کرکے ضائع ہونے سے بچانے کیلئے ان پر ٹینکیاں لگائی گئی۔

انہوں نے مزید کہا کہ جمع شدہ پانی کو لوگ کسی بھی وقت برتنوں یا پائپ کے ذریعے اپنے گھروں تک لے جاسکیں گے۔ عبدالوہاب کے مطابق انہوں نے اور کمر خیل یوتھ کے خلیل خان آفریدی نے ذاتی طور پر سروے کرکے مذکورہ 6 عدد جگہوں کی نشاندہی کرکے ایف سی محسود سکاؤٹس کے کمانڈنٹ لیفٹیننٹ کرنل احمد مدنی کو اگاہ کیا اور انہوں نے ان جگہوں پر ٹینکیاں لگا دی۔

ڈاکٹر عبدالوہاب نے بتایا کہ ان ٹینکیوں سے تقریباً 100 سے زیادہ خاندانوں کو پینے اور گھریلوں استعمال کیلئے صاف پانی مہیا ہو سکے گا۔ انہوں نے کہا کہ پہلے یہ پانی مختلف جگہوں میں جوہڑ کی شکل میں جمع ہوتا تھا جو گندہ اور ناقابل استعمال ہوتا اور جلد ہی ختم ہو جاتا جبکہ اب اسکے برعکس پانی کو استعمال میں لایا جاسکے گا۔

سماجی کارکن ڈاکٹر عبدالوہاب کے مطابق علاقے کے لوگ غربت کی وجہ سے سینکڑوں گز دور پانی کیلئے پائپ نہیں خرید سکتے تاہم حکومت اور سیکیورٹی اداروں سے اپیل کرتے ہیں کہ مزید پائپ لائن کو بچھایا جائے تاکہ صاف پانی تمام گھروں کو قریب سے ہی مہیا ہوسکے۔