افغانستان میں خوشحالی ہوگی تو پاکستان میں خوشحالی ہوگی، یوسف رضا گیلانی

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

سابق وزیراعظم و اپوزیشن لیڈر سنیٹ سید یوسف رضا گیلانی نے کہا ہے کہ افغانستان کے معاملے پر مشترکہ اجلاس ہونا چاہیے، افغانستان پر اس وقت پوری دنیا کی نظریں ہیں، افغانستان ہمارا ہمسایہ ممالک ہے ہم چاہتے ہیں افغانستان میں امن ہو، افغانستان میں امن لانے کے لیے کردار ادا کر رہے ہیں.

انہوں نے کہا کہ افغانستان میں خوشحالی ہوگی تو پاکستان میں خوشحالی ہوگی۔ ہماری پوزیشن افغانستان کے حوالے سے بہت اہم ہے، ہم افغانستان میں امن کی کوشش کرتے رہیں گے، چین کے ساتھ ہمارے بہت اچھے تعلقات ہیں، چینی سیکورٹی کے لیے فول پروف انتظام کرنے چاہیے.

انہوں نے مزید کہا کہ پاک چین دوستی سمندر سے گہری، شہد سے میٹھی اور پہاڑوں سے بلند ہے، دہشت گردی کے پیش نظر چینی ورکز کا تحفظ مزید بہتر بنایا جائے، ہمارے ادارے مضبوط ہیں.

انہوں نے کہا کہ سکیورٹی بھی مضبوط ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے دعوت اسلامی ملتان کے مرکز فیضان مدینہ کے دورہ کے موقع خطاب کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے اپنی حکومت میں زراعت پر زیادہ توجہ دی، ہم اپنی حکومت میں کاٹن، شوگر، چاول سمیت دیگر اجناس ایکسپورٹ کر رہے تھے، پاکستان پیپلزپارٹی جب بھی آتی ہے کسان خوشحال ہوتا ہے، مجھے خوشی ہوئی کہ یوم عاشورہ کے موقع پر طالبان نے اچھا مظاہرہ کیا.

انہوں نے خطاب کرتے ہوے کہا کہ اس وقت جو بجٹ آیا عوام دوست نہیں ہے، آئے دن منی بجٹ آ رہے ہیں، اس ملک میں مہنگائی آسمان تک پہنچ گئی ہے، تین سالہ کارکردگی کی تشریح سے بہتر ہے عوام کی رائے لے لی جائے.

انہوں نے مریم نواز کے بیٹے کی شادی پر ان کو مبارک باد پیش کرتا ہوں، میں تو کہتا ہوں مریم نواز کے بیٹے کی شادی پر ان کی فیملی ایک ساتھ ہوتی، ہمارا جہانگیر ترین سے کوئی رابطہ نہیں ہے.

انہوں نے مزید کہا کہ جہانگیر ترین کا پیپلزپارٹی میں آنا ان کا اپنا فیصلہ ہوگا، پیپلزپارٹی نے ابھی تک جہانگیر ترین کے ساتھ رابطہ نہیں کیا، الیکٹرانک ووٹنگ مشین پر ہمارے تحفظات ہیں، الیکٹرانک ووٹنگ مشین پر فیصلہ متفقہ ہوگا.

انہوں اخیر میں کہا کہ حکومت اپنے طور پر الیکٹرانک ووٹنگ مشین کو استعمال نہیں کر سکتی۔