افغانستان میں امن خطے میں استحکام کیلئے ضروری ہے

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

 آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ افغانستان میں پائیدار امن کے لیے تمام فریقین کو اشتراک پر مبنی ذمہ داری کے تحت مثبت کردار ادا کرنے کی ضرورت ہے۔

افغانستان میں امن خطے میں استحکام کے لیے ضروری ہے۔ ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر بتایا کہ جنرل ہیڈ کوارٹرز راولپنڈی میں کور کمانڈرز اجلاس سے خطاب میں آرمی چیف کا کہنا تھا کہ افغان مسئلے کو بات چیت کے ذریعے حل کرنے میں پاکستان نے معاونت اور اخلاص پر مبنی ہر ممکن سنجیدہ کوششیں کیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان اپنا مثبت کردار جاری رکھے گا۔ امن کے لیے پاکستان کے عزم، روابط اور باہمی خوشحالی کے ویژن کا اعادہ کرتے ہوئے آرمی چیف نے کہا کہ امن دشمنوں کے منصوبوں کو ناکام بنانے کے لیے غلط فہمیوں سے اجتناب کرنے کی ضرورت ہے۔

دو روزہ کور کمانڈرز کانفرنس میں عسکری قیادت نے داخلی، علاقائی اور عالمی سکیورٹی صورتحال کا جامع جائزہ لیا۔

فورم کو پاک افغان بین الاقوامی سرحد اور پاکستان کی داخلی سلامتی بالخصوص مغربی زونز پر اس کے اثرات سمیت بڑھتے ہوئے چیلنجز سے نبرد آزما ہونے کے لیے اٹھائے گئے اقدامات کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی گئی۔

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے مغربی سرحد پر انتہائی چوکنا رہنے پر زور دیا۔ انہوں نے جامع بارڈر مینجمنٹ کے تحت موثر بارڈر کنٹرول کو ممکن بنانے کے لیے اٹھائے گئے اقدامات پر اطمینان کا اظہار کیا۔

مختلف النوع اور سکیورٹی چیلنجز سے موثر انداز میں نبرد آزما ہونے کے لیے عسکری قیادت نے مکمل قومی ہم آہنگی کی اپروچ کو اپنانے کی ضرورت پر زور دیا۔ آرمی چیف نے بہترین آپریشنل تیاریوں پر فارمیشن کمانڈرز کو سراہا۔

انہوں نے مون سون، پولیو مہم اور کورونا کے خلاف جاری قومی کوششوں میں سول انتظامیہ کی موثر اور مسلسل مدد پر بھی فارمیشنز اور ان کے کمانڈرز کی تعریف کی۔