چمن، بابِ دوستی کو کھول دیا گیا

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

افغان طالبان نے پاکستانی حکام سے مذاکرات کی کامیابی کے بعد چمن پر پاک افغان بارڈر باب دوستی کھولنے کا اعلان کردیا۔ 

طالبان افغان کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق پاکستانی حکام کے ساتھ کامیاب مذاکرات کے بعد پاک افغان بارڈر باب دوستی کھولنے کا فیصلہ کیا گیا۔

اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ پاکستانی حکام کے ساتھ 5 میں سے 3 شرائط پر اتفاق جبکہ 2 کو بعد میں زیربحث لایا جائے گا، باب دوستی پیدل آمدورفت کیلئے روزانہ 8 گھنٹے کھلی رہیں گی، پیدل آمدورفت شناختی کارڈ کے علاوہ افغانی دستاویز اور مہاجرکارڈ پر بھی ہوگی۔

ڈپٹی کمشنر چمن جمعہ داد کے مطابق اسپین بولدک پرطالبان قبضے کے بعد طالبان شیڈو گورنر کے مطالبات سامنے آئے تھے تاہم مذاکرات کی کامیابی کے بعد باب دوستی کھول دی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ افغانستان جانے اور آنے والے شہریوں کی مشکلات کے پیش نظر آمدورفت کے اوقات کار بھی بڑھا دیے ہیں اور باب دوستی سے آمدورفت صبح 8 سے شام 4 بجے تک ہوگی۔ ان کا کہنا تھاکہ آج سے بارڈر پر دوطرفہ تجارت اور پیدل آمدورفت بحال رہیں گی۔

خیال رہے کہ گزشتہ دنوں افغانستان کے سرحدی ضلع اسپین بولدک میں طالبان شیڈو حکومت نے چمن بارڈر کراسنگ بند کردی تھی۔