صوبائی کابینہ میں پہلی بارقبائلی خاتون رکن شامل

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

وزیراعظم عمران خان کی منظوری کے بعد خیبرپختونخوا کابینہ میں توسیع کا فیصلہ کیا گیا ہے اور پہلی بار قبائلی خاتون کو بھی کابینہ میں شامل کیا جائے گا۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے خیبرپختونخوا کابینہ میں توسیع کی منظوری دیدی ہے اور ممکنہ وزراء کے نام بھی وزیراعظم کو پیش کردیے گئے ہیں جو تاحال ظاہر نہیں کیے گئے ہیں۔

وزیراعظم عمران خان نے وزیراعلی محمود خان کو اختیار دیا ہے کہ وہ اپنی مرضی سے کابینہ میں توسیع کریں۔ بتایا گیا ہے کہ پہلی بار قبائلی اضلاع سے خاتون رکن کو بھی کابینہ میں شامل کیا جارہا ہے۔

اس حوالے سے صوبائی وزیر اطلاعات شوکت یوسفزئی نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ قبائلی اضلاع میں انتخابات کے بعد فیصلہ کیا گیا تھا کہ کابینہ میں توسیع کی جائے گی، وزیراعظم نے کابینہ میں توسیع کی منظوری دیدی ہے اور آئندہ ہفتے وزیراعلی اس کا باضابطہ اعلان کردیں گے۔

واضح رہے کہ قبائلی اضلاع میں صوبائی اسمبلی کے انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف نے سب سے زیادہ 6 سیٹیں حاصل کی تھی اس کے علاوہ 2 آزاد اُمیدواروں نے بھی تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کرلی تھی۔

اس کے ساتھ ساتھ جمعیت علماء اسلام (ف) اور بلوچستان عوامی پارٹی میں شمولیت اختیار کرنے والے الحاج شاہ جی گل آفریدی گروپ نے 3،3 جبکہ عوامی نیشنل پارٹی اور جماعت اسلامی نے ایک ، ایک سیٹ حاصل کی۔

فارمولے کے مطابق خواتین کی مخصوص 4 نشستوں پر تحریک انصاف کے حصے میں 2 جبکہ جمعیت علماء اسلام (ف) اور بلوچستان عوامی پارٹی کے حصے میں ایک، ایک سیٹ آیا۔