صوابی : بھائیوں نے بہن کو ایک سال تک زنجیروں میں جکڑ رکھا

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

صوابی میں سابق شوہر سے حق مانگنے پر بھائیوں نے بہن کو زنجیروں میں جکڑ دیا جب کہ پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے بھائیوں کو گرفتار کرکے خاتون کو بازیاب کرالیا۔

تفصیلات کے مطابق صوابی کے ایک گاؤں درہ میں انسانیت سوز واقعہ سامنے آیا جہاں بھائیوں نے بہن کو نوکری سے روکنے اور خاوند کے خلاف کیس کرنے پر ایک سال قبل رنجیروں میں جکڑ کر کمرے میں قید کرلیا جسے پولیس نے بازیاب کرالیا۔

ڈی پی او صوابی محمد شعیب نے بتایا کہ ایک سال سے کمرے میں بند زنجیروں میں قید خاتون کو پولیس نے بازیاب کروالیا ہے.

انہوں نے کہا کہ خاتون کو سگے بھائیوں نے ایک سال سے زنجیروں میں جکڑ کر کمرے میں قید کیا ہوا تھا، بھائیوں نے بہن کو نوکری سے روکنے اور خاوند کے خلاف کیس لڑنے کی وجہ سے قید کیا تھا.

انہوں نے مزید بتایا کہ خاتون کی طلاق ہوچکی ہے، خاتون نے شوہر سے بچوں کے اخراجات کے سلسلے میں فیملی کورٹ سے رجوع کیا تھا۔

ڈی پی او صوابی کے مطابق خاتون کے گلے اور ٹانگ میں زنجیر باندھی گئی تھی اور زنجیر کو روشن دان کے ساتھ باندھا گیا تھا، تین ملزمان گرفتار ہیں جبکہ ایک کو جلد گرفتار کرلیا جائے گا۔

خاتون نے اپنے بیان میں کہا کہ مجھے پانچوں بھائیوں نے زنجیروں سے باندھا اور تقریباً ایک سال ہونے والا ہے، میرے بھائیوں نے مجھے زبردستی باندھے رکھا، بھائیوں کے نام انجم، وحید، ندیم، فہیم اور ساہر ہیں، یہ مجھ پر ظلم کرتے ہیں.

خاتون نے بتایا کہ میں طلاق یافتہ ہوں اور میرے دو بچے ہیں، میں نے عدالت میں کیس کیا ہے، میرا کیس کمزور ہے، اس لیے یہ لوگ میرے ساتھ کھڑے نہیں ہوئے، میں نے خود نوکری کی اور اپنا کیس لڑا لیکن پھر بھی انہوں نے مجھ پر ظلم کیا۔