ضلع خیبر : اقلیتی برادری کے حوالے سے اہم فیصلے

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

ڈپٹی کمشنر خیبر منصور ارشد نے کہا ہے کہ ضلع بھر کے عوام بشمول اقلیتوں کے حقوق کا تحفظ اور ان کو بنیادی سہولیات کی فراہمی اولین ترجیح ہے جس پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے ضلعی ایڈوائزری کمیٹی برائے اقلیتی برادری کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر اقلیتی ممبر صوبائی اسمبلی ویلسن وزیر، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر نور ولی خان، اسسٹنٹ کمشنر نیک محمد، جواد علی، اکبر افتخار احمد، سکھ کمیونٹی کے بابا جی گورپال سنگھ، ایکسئین سی اینڈ ڈبلیو، اسسٹنٹ ڈائریکٹر بلدیات، تحصیل میونسپل افسران، محکمہ تعلیم اور دیگر حکام نے شرکت کی۔

میٹنگ میں تحصیل سطح پر کھلی کچہری کے انعقاد، دہشتگردی سے متاثرہ سکھ تاجروں کی مالی امداد، کمی اور فراہمی، تیراہ اور باڑہ میں اقلیتی برادری کی مذہبی رسومات کے لیے کمیونٹی ہال کی تعمیر، شمشان گھاٹ کلنگہ کجھوری باڑہ میں ضروری تعمیرات، محکموں کی خالی آسامیوں میں اقلیتی پانچ فیصد فیصد کوٹہ، اقلیتوں کے لئے سکالرشپ، جہیز فنڈ اور دیگر بنیادی ضروریات کے متعلق تبادلہ خیال کیا گیا۔

اس موقع پر ڈپٹی کمشنر منصور ارشد کا کہنا تھا کہ اقلیتی برادری کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کے لیے اقدامات اٹھائیں جائیں گے۔

اس کے علاوہ انہوں نے اقلیتی برادری کے لئے کمیونٹی سنٹر کے لئے سفارشات تیار کرنے، تحصیل سطح پر کھلی کچہری میں پہلے فیز میں باڑہ میں آئندہ جمعہ کو اقلیتی برادری کے لیے کھلی کچہری کے انعقاد، محکموں کو اقلیتی کوٹہ کے مطابق آسامیوں میں ترجیح دینے، جہیز اور سکالرشپ فنڈز میں حصہ دینے، دہشتگردی سے متاثرہ سکھ تاجر کے لیے مالی امداد اور دیگر بنیادی ضروریات کی فراہمی کے لئے عملی اقدامات کی ہدایات جاری کر دیں۔