پاکستان افغان عوام کے فیصلے سے بننے والی حکومت کی تائید کرے گا

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

امریکا کو افغانستان کیخلاف اڈے دیے تو پاکستان پھر دہشتگردوں کا ہدف بنے گا، عمران خان

وزیراعظم عمران خان نےکہا ہےکہ طاقتور امریکا 20 برس میں افغانستان کے اندر سے جنگ نہ جیت سکا توپاکستان میں اڈوں سے یہ کیسےممکن ہے؟ اور اگر امریکا کو افغانستان کیخلاف اڈے دیےتو پاکستان پھر دہشتگردوں کا ہدف بنے گا۔

امریکی اخبار واشنگٹن پوسٹ میں لکھے گئے مضمون میں وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان افغان عوام کے فیصلے سے بننے والی حکومت کی تائید کرے گا، افغانستان میں کسی بھی دھڑے کی حمایت نہیں کرتے.

انہوں نے کہا ہے کہ ماضی میں ایک دھڑےکی حمایت سے پاکستان نے غلطی کی جسے دہرایا نہیں جائے گا۔

وزیراعظم نے اپنے مضمون میں افغانستان میں سیاسی امن عمل کے لیے کوششیں جاری رکھنے کے عزم کا اظہار کیا۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ طاقتور امریکا 20 برس میں افغانستان کے اندر سے جنگ نہ جیت سکا تو پاکستان میں اڈوں سے یہ کیسے ممکن ہے؟ اگر امریکا کو افغانستان کیخلاف اڈے دیے تو پاکستان پھر دہشتگردوں کاہدف بنے گا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان نے پہلے ہی افغان جنگ میں بہت نقصان برداشت کیا، اب پاکستان ایک اور جنگ کا متحمل نہیں ہو سکتا۔

عمران خان نے اپنے مضمون میں افغانستان میں امن عمل کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ امریکا اور پاکستان کا افغانستان میں ایک ہی ہدف ہے، سیاسی امن عمل، جس کے لئے کوششیں جاری رہیں گی۔