غیر پارلیمانی زبان استعمال کرنیوالے پر قومی اسمبلی کے دروازے بند

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

قومی اسمبلی کے اسپیکر اسد قیصر نے بجٹ سے متعلق اجلاس کے دوران پیش آنے والے ناخوشگوار واقعے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ غیر پارلیمانی زبان استعمال کرنے والے اراکین کو آج داخلے کی اجازت نہیں ہوگی۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں اسپیکر اسد قیصر نے کہا کہ منگل کو قومی اسمبلی کے اجلاس میں حزب اختلاف اور حکومتی ارکان کی جانب سے غیر پارلیمانی رویہ اور نازیبا زبان کا جو اظہار کیا گیا، وہ قابل مذمت اور مایوس کن ہے۔

انہوں نے کہا کہ واقعے کی مکمل تحقیقات کروائی جائے گی اور غیر پارلیمانی زبان استعمال کرنے والے ارکان کو ایوان میں داخلے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

قبل ازیں قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف اور اور پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف کی بجٹ تقریر کے دوران حکومتی اراکین اور وزراء کی جانب سے شور شرابہ کیا گیا تھا جبکہ اپوزیشن نے بھی اس میں بھرپور حصہ لیا تھا۔

قومی اسمبلی کے اجلاس میں حکومت اور اپوزیشن اراکین کی جانب سے ایک دوسرے کے خلاف بدزبانی اور بجٹ کی کاپیاں پھیکنے سمیت شور شرابے کے باعث اسپیکر کو متعدد مرتبہ اجلاس میں وقفہ لینا پڑا۔