کوئٹہ : دہشتگردوں کا سکیورٹی فورسز پر حملہ، 4 اہلکار شہید

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

وطن کے دشمن بزدل دہشتگردوں کے حملے میں مارگیٹ مائنز کی سکیورٹی پر مامور فرنٹیئر کور کے 4 جوان شہادت کے رتبے پر فائز ہوگئے ہیں۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق فرنٹیئر کور کی ٹیم پر حملہ بارودی سرنگ کے ذریعے کیا گیا۔ حملے میں جونیئر کمیشنڈ افسر سمیت 4 بہادر جوان شہید ہوئے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق شہداء میں صوبیدار سردار علی خان، سپاہی مصدف حسین، سپاہی محمد انور، سپاہی اویس خان شامل ہیں۔ ایف سی کے جوان مارگیٹ مائنز کی سکیورٹی پر مامور تھے۔

صوبیدار سردار علی خان کا تعلق ضلع لکی مروت کے گاؤں وانڈا لُنگرکیل سے ہے جبکہ سپاہی مصدف حسین وہاڑی، سپاہی محمد انور ڈی آئی خان کے رہائشی جبکہ سپاہی اویس خان کا تعلق بانڈل ضلع نیلم سے تھا۔

آئی ایس پی آر کے مطابق دہشتگردوں کی تلاش کیلئے ایف سی بلوچستان کا علاقے میں سرچ آپریشن جاری ہے۔ بلوچستان میں سخت محنت سے امن و استحکام قائم کیا گیا، امن دشمنوں کے ایسے بزدلانہ اقدامات بلوچستان کے امن کو سبوتاژ نہیں کرسکتے۔

سکیورٹی فورسز جانوں کے نذرانے دے کر امن دشمنوں کے مذموم عزائم خاک میں ملانے کیلئے پرعزم ہیں۔

دیگر ذرائع کے مطابق پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ کوئٹہ میں دہشت گردوں نے سکیورٹی فورسز پرحملہ کیا، دہشتگردوں کے حملے میں ایف سی بلوچستان کے 4 اہلکار شہید ہوگئے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق سکیورٹی اہلکار مارگٹ مائنز کی سکیورٹی پر تعینات تھے، شہداء میں ایف سی کا جے سی او بھی شامل ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق شہداء میں صوبیدار سردار علی خان، سپاہی مصدف حسین، سپاہی محمد انور اور سپاہی اویس بھی شامل ہیں۔

آئی ایس پی آر کے مطابق علاقے میں سرچ آپریشن جاری ہے، سکیورٹی فورسز دہشتگردوں کے ناپاک عزائم کو ناکام بنا دیں گی۔

آئی ایس پی آر کا مزید کہنا ہے کہ ملک دشمن عناصر کی بزدلانہ کارروائی سے امن کی کوششوں کو سبوتاژ نہیں کیا جاسکتا۔