صوبائی حکومت کا قبائلی اضلاع کے عوام کو بلا سود قرضے دینے کا اعلان

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمودخان نےنئےقبائلی اضلاع میں انصاف روزگارسکیم پر پیش رفت کاجائزہ لیاہےاورواضح کیا ہےکہ انصاف روزگارسکیم سےقبائلی اضلاع کےعوام زیادہ سے زیادہ مستفید ہونےچاہیئے۔

انہوں نے کہا ہےکہ انصاف روزگارسکیم کے تحت قبائلی اضلاع کےعوام کوبلاسودقرضےدیئےجائیں گے، جبکہ ان قرضوں سےقبائلی اضلاع کےعوام روزگارشروع کرسکیں گے۔وزیراعلیٰ نے انصاف روزگار کےحوالےسےسوشل میڈیا، پرنٹ میڈیا، الیکٹرانک میڈیا اور دیگر ابلاغ عامہ کے فورم پر بیک وقت بھرپور آگاہی مہم شروع کرنے کی ہدایت کی ، تاکہ زیادہ سے زیادہ قبائلی اضلاع کے ضرورت منداس سکیم سے استفادہ کر سکیں۔

انہوں نے اس مقصد کے لئے تمام اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز اور سب ڈویژن کے انتظامی حکام کو بھی اپنا کردار ادا کرنے کی ہدایت کی ہے۔وزیراعلیٰ نےگورنمنٹ پولی ٹیکنیک انسٹیٹیوٹ مٹہ سوات میں ستمبر 2019سے کلاسز کا اجرا ء کرنے اور ووکیشنل انسٹیٹیوٹس میں کمپیوٹر لیبارٹریز کا قیام جلد یقینی بنانے کی ہدایت کی ہے۔

وہ وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ پشاو رمیں محکمہ صنعت کےمختلف منصوبوں پر پیش رفت کےحوالےسےاجلاس کی صدارت کررہےتھے۔وزیراعلیٰ کےمعاون خصوصی برائےصنعت عبدالکریم، پرنسپل سیکرٹری برائے وزیراعلیٰ شہاب علی شاہ، سٹریٹیجک سپورٹ یونٹ کے سربراہ صاحبزادہ سعید ، سیکرٹری صنعت، بورڈ آف انویسٹمنٹ اینڈ ٹریڈ، ٹیوٹا اوردیگر محکموں کے اعلیٰ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔

وزیراعلیٰ کو نئے اضلاع میں انصاف روزگار سکیم پر پیش رفت سے آگاہ کیا گیا اور بتا یا گیا کہ سکیم کے لئے درخواستوں کی وصولی جاری تھی تاہم الیکشن کمیشن کی طرف سے پابندی کی وجہ سے کام روک دیا گیا تھا۔ چار ہزار سے زائد درخواستیں موصول ہوچکی ہیں جن کی جانچ پرکھ شروع ہے، جبکہ 20 اگست 2019 ء تک توثیقی مراسلہ جات کی تقسیم شروع کر دینگے۔

وزیراعلیٰ کو آن لائن رجسٹریشن کے حوالے سے آگاہ کرتے ہوئےبتایاگیاکہ ڈائریکٹوریٹ آف انڈسٹریز اینڈ کامرس کی طرف سے نئے کمپنیوں اور این جی اوز کی آن لائن رجسٹریشن کیلئے اپلیکیشن کی تیاری جاری ہے۔ آئندہ ماہ کے اواخر میں آن لائن رجسٹریشن کا اجراء کردیاجائےگا۔

اس موقع پر وزیراعلیٰ نےصوبے کےٹیکنیکل کالجز کایونیورسٹی آف ٹیکنالوجی نوشہرہ کےساتھ الحاق یقینی بنانےکیلئےکمیٹیوں کی تشکیل،امتحانی سیکشن کی توسیع،کالجزکی نشاندہی سیمت دیگر تمام معاملات ٹائم لائن کےاندر مکمل کرنےکی ہدایت کی ہے۔

وزیراعلیٰ کاکہناتھاکہ صوبائی حکومت نئےقبائلی اضلاع کی ترقی وخوشحالی،قبائلی اضلاع میں سیاحت کےفروغ اورعوام کےلئےروزگارکےبہترمواقع فراہم کرنےکیلئےتمام ممکن اقدامات اٹھارہی ہے۔قبائلی اضلاع باقاعدہ طور پراب قومی دھارےمیں آگئے ہیں اب ان کی مجموعی ترقی ترجیحات ہیں ۔