بی بی زئی رغزائی: وقوعہ کے زخمی کا ڈی پی او کو بیان

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin

جنوبی وزیرستان : مکین کے علاقے ،بی بی زائی رغزائی میں ہونے والے وقوعہ کے زخمی کا ڈی پی او شوکت علی کو بیان رکارڈ کر لیا.

واضح رہے کہ گزشتہ رات بی بی زئی رغزائی کے علاقے میں فائرنگ کے نتیجے میں دو مقامی نوجوان جاں بحق اور ایک زخمی ہوا تھا. جس کے بعد اہل علاقہ اور لواحقین نے مکین تحصیل بلڈنگ /تھانہ کے سامنے دھرنا شروع کر رکھا ہے.

واقعے کی خبر پر فوراً ایکشن لیتے ہوئے سیکورٹی فورسز وقوعہ پر پہنچ گئیں دونوں لاشوں کو قوم کے مشران کے حوالے کیا اور زخمی کو فوری سرکاری ہسپتال پہنچا دیاگیا۔

زخمی جوان کے اہلِ خانہ نے بیان دیا کہ سیکیورٹی فورسز نے فوری طور پر ہسپتال پہنچا کر انکے بیٹے کی جان بچائی۔ اہل خانہ کے بیان کی روشنی میں پولیس اور انتظامیہ واقعے کی تہہ تک پہنچنے کی کوشش کر رہی ہے اور جلد ہی حقائق میدیا کے سامنے پیش کر دئے جائینگے۔

لاشوں پر سیاست کرنے والی پی۔ٹی۔ایم نے حسب روایت اس واقعے پر بھی سیکیورٹی فورسز کے خلاف پروپیگنڈہ شروع کر دیا ہے۔انکا پروپیگنڈہ بھی سمجھ سے بالا ہوتا ہے۔

سیکورٹی فورسز جب وقوعہ پر مدد کرنے پہنچے تو ساری کارستانی فوج پر ڈال کر عوام کو اشتعال دلانے کی کوشش کرتی ہے لیکن اگر بدقسمتی سے فوج واقعے پر نہ پہنچ پائے تو یہ پروپیگنڈہ شروع کر دیتے ہیں کہ فوج تو عوام کے تحفظ کیلئے کچھ نہیں کرتی ۔

مگر سوچنے کی بات یہ ہے کہ سیکیورٹی فورسز نے ہی یہ کیا ہوتا تو تیسرے کو کیسے چھوڑ دیا۔ اور چھوڑ بهی دیا تو خود ہی زخمی کو ہسپتال بھی لے گئے۔ زخمی جوان کی جان کیوں بچائی گئی۔زخمی جوان کے اہلِ خانہ کیوں بیان لکھا رہے ہیں کہ سیکیورٹی فورسز والے انھیں ہسپتال پہنچایا۔

پی ٹی ایم اپنی آنکھیں بند کر سکتی پر قوم کو آنکھیں کھولنا ہونگی ۔ پی ٹی ایم کی سازشوں کو سمجھنا ہوگا