ضلع جنوبی وزیرستان کے انتظامی اور لائن ڈیپارٹمنٹس کے افسران کے لئے ایک روزہ تربیتی ٹریننگ

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

ضلع جنوبی وزیرستان کے انتظامی اور لائن ڈیپارٹمنٹس کے افسران کے لئے ایک روزہ تربیتی ٹریننگ, پرفارمنس مینجمنٹ اینڈ ریفارمز یونٹ کا دائرہ کار قبائلی اضلاع تک بڑھانے پر عمل درآمد تیز.

پرفارمنس مینجمنٹ اینڈ ریفارمز یونٹ(پی ایم آر یو) خیبر پختونخوا کے قیام کا مقصد صوبے میں عام شہریوں کا فلاح وبہود،سرکاری امورکی انجام دہی میں شفافیت اورخود احتسابی متعارف کرانے سمیت سروسز ڈیلیوری کی بہتری اورای گورننس کا فروغ ہے۔  ضم شدہ قبائلی اضلاع کے عوام کو بھی اس سسٹم سے مستفید ہونے کا موقع فراہم کرنے کے لئے ان اضلاع میں بھی پہلی بار یہ سسٹم متعارف کرایاجارہاہے۔

ان خیالات کا اظہار چیف سیکرٹری خیبرپختونخوا آفس کے پر فارمنس مینجمنٹ اینڈریفارمز یونٹ (پی ایم آر یو) کے ڈپٹی کوارڈینیٹرڈاکٹر عاکف خان نے ڈپٹی کمشنر آفس قبائلی ضلع جنوبی وزیرستان کے دفتر میں ضلع بھر کے تمام انتظامی افسران اور لائن ڈیپارٹمنٹس کے حکام کے لئے گوڈ گورننس فریم ورک، کے پی انسپکشنز ایپ،ٹاسک مینجمنٹ سسٹم،کے پی سٹیزن پورٹل اور ریونیو کیس ٹریکنگ سسٹم پرایک روزہ ٹریننگ کے اغراض ومقاصد، اہمیت، طریقہ کار اوروژن پر تفصیلی بریفنگ دیتے ہوئے کیا۔

اس موقع پر اسسٹنٹ کمشنر سرویکئ یوسف علی مہمند،اسسٹنٹ کمشنر لدھااور ضلع جنوبی وزیرستان کے تمام لائن ڈیپارٹمنٹس کے افسران نے شرکت کی۔

ڈاکٹر عاکف خان نے شرکاء کو بتایا کہ گڈ گورننس اسٹریٹیجی کے انعقاد کا مقصد حکومتی معاملات میں شفافیت اور احتساب کومتعارف کرنے اور عوام کی خدمات تک رسائی کو ان کی دہلیز تک پہنچانے کے ساتھ ساتھ عوام کی شرکت سے ترقیاتی معاملات کو آگے بڑھاناہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہ سٹریٹیجی پانچ بنیادی ستونوں پر مبنی ہے جن میں شفاف طرز حکمرانی،عوامی خدمات تک رسائی،عوامی اشتراک،احتساب اور حکومتی معاملات میں جدید ٹیکنالوجی کے ذریعے کارکردگی کو بہتر بناناشامل ہے۔

مزید براں متعلقہ شرکاء کو خیبر پختونخوا انسپکشن سسٹم پر بھی تربیت دی گئی۔ڈاکٹر عاکف خان نے شرکاء کے سوالوں کے جوابات بھی دئیے اور کہا اگر سسٹم پر عملدرآمد کوئی مسئلہ ہو تو کسی بھی وقت پی ایم آر یو سے رہنمائی حاصل کی جاسکتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ کھلی کچہریوں کا انعقاداس سسٹم کا اہم جز ہے جس سے عام آدمی کے مسائل آسانی سے اس کے دہلیز پر حل کئے جاسکتے ہیں لہٰذا کھلی کچہریوں کے انعقاد پر توجہ دی جائے اوردور دراز علاقوں میں ان کا زیادہ سے زیاد انعقاد کیاجائے۔

ڈپٹی کوآرڈینیٹرنے سرکاری افسران پر زوردیاکہ وہ پی ایم آر یوکے متعارف کردہ سسٹم میں خصوصی دلچسپی لیں کیونکہ اب یہ سرکاری امور کی انجام دہی کا لازمی حصہ بن چکاہے اوروزیر اعلیٰ خیبرپختونخوااورچیف سیکرٹری خیبرپختونخوابھی اس سسٹم کی خودمانیٹرنگ کررہے ہیں۔