پاک ایران سرحد پر تیسرے کراسنگ پوائنٹ کا افتتاح

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

پاک ایران سرحد پر حکومت پاکستان اور ایران کی مشترکہ کاوشوں سے تیسرے بارڈر کراسنگ پوائنٹ کا افتتاح کردیا گیا۔

افتتاح وفاقی وزیر دفاعی پیداوار زبیدہ جلال نے مکران ڈویژن کی سرحدی علاقہ ضلع کیچ کی سب تحصیل مند سے متصل پاک ایران بارڈر پیشین مندردیگ کراسنگ پوائنٹ پر کیا

پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان کے ویژن کے مطابق پشین میں تیسرے بارڈر کراسنگ پوائنٹ کا افتتاح تھا

افتتاح کے موقع پر ایران کے وزیر محمد اسلامی بھی تربت سے متصل پاک ایران سرحد پشین مند کراسنگ پوائنٹ پر موجود تھے جبکہ تقریب میں پاکستان اور ایران کے اعلیٰ حکام بھی شریک ہوئے۔

اس موقع پر وفاقی وزیر دفاعی پیداوار زبیدہ جلال نے کہا کہ پاکستان کی ستر سالہ تاریخ میں آج کا دن پاکستان اور خصوصا بلوچستان کے عوام کیلئے تاریخی دن ہے.

افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوے انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم پاکستان عمران خان کی قیادت میں دونوں برادر مسلم ہمسایہ ممالک کے تعلقات کو تاریخی فروغ حاصل ہو رہا ہے.

انہوں نے کہا کہ 6 مہینے کے کم عرصے میں دو کراسنگ پوائنٹ کھولنا ایک اہم سنگ میل ہے جس سے پاک ایران مند پیشن بارڈر کراسنگ پوائنٹ سے علاقے کے مکینوں کو روزگار اور تجارتی فوائد حاصل ہونگے۔

یاد رہے کہ پاک ایران کا یہ تیسرا بارڈر کراسنگ پوائنٹ ہے جبکہ دسمبر 2020 کو وفاقی وزیر دفاعی پیداوار زبیدہ جلال نے ضلع گوادر سے منسلک گبد ریمدان کا بھی افتتاح کیا تھا.

ان بارڈر کراسنگ پوائنٹ سے نہ صرف دونوں برادر ہمسایہ ممالک کے مابین دوطرفہ تجارت بلکہ باہمی تعلقات اور سیاحت کو بھی فروغ دینے میں معاون ثابت ہوگا۔

واضح رہے کہ سی پیک کے آنے کے بعد مکران ڈویژن میں معاشی اقتصادی اور سماجی ترقی کے منصوبوں پر تیزی سے عملدرآمد جاری ہے.

ریاستی حکومت کی جانب سے جیڈا کے دائرہ کار میں توسیعی منصوبوں کے تحت مکران ڈویژن کے اہم سرحدی اضلاع کیچ اور پنجگور میں انڈسٹریل زون کے قیام کیلئے بھی کوششیں جاری ہیں.

گوادر ابڈسٹریل اسٹیٹ ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے منیجنگ ڈائریکٹر عطاء اللہ جوگیزئی کا کہنا ہے کہ تربت میں ایک ہزار ایکڑ پر انڈسٹریل زون کیلئے سرکاری اراضی حاصل کرلی گئ ہے .

انہوں نے کہا کہ 100 ملین کی لاگت سے انڈسٹریل زون کی کنسلٹنسی کیلئے فرم کی خدمات حاصل کرلی گئ ہے جبکہ موجودہ وفاقی اور صوبائ حکومت مکران ڈویژن میں صنعتی ترقی اور روزگار کے مواقع پیدا کرنے کیلئے مئوثر حکمت عملی کے تحت اقدامات اٹھارہی ہے.

ان کا کہنا ہے مکران ڈویژن کے سرحدی اضلاع میں لیگل بارڈر ٹریڈطسے نہ صرف تجارتی سرگرمیوں میں تیزی آئیگی بلکہ انوسٹرز کیلئے گوادر کے علاوہ مکران ڈویژن کے دیگر صنعتی زون میں سرمایی کاری کے بہترین مواقع میسر آئیں گے.

انہوں نے مزید کہا کہ اہ منصو نے ملکی معیشت کی ترقی کیساتھ بلوچستان کے سرحدی اضلاع کے لوگوں کا معیار زندگی بلند کرنے میں معاون ثابت ہونگے ۔

مکران ڈویژن کے عوامی حلقوں نے لیگل بارڈر ٹریڈ کے حوالے سے وزیر اعظم پاکستان عمران پاکستا ن کے اعلانات اور وعدوں کی مختصر مدت میں تکمیل کو یقینی بنانے پر وفاقی وزیر دفاعی پیداوار زبیدہ جلال ۔

کمانڈر سدرن کمانڈ بلوچستان لیفٹننٹ جنرل سرفراز علی وزیر اعلی بلوچستان صوبائ وزیر خزانہ میر ظہور بلیدی صوبائ وزیر صنعت وحرفت حاجی طور اوتمانخیل اوردیگر حکام کا شکریہ ادا کیا.

انہوں نے اس توقع کا اظہار کیا ہے کہ ریاستی حکومت سرحدی علاقوں کی ترقی اور عوام کی خوشحالی کیلئےوزیراعظم پاکستان عمران خان کے وژن کو کامیابی سے پایہ تکمیل تک پہنچائیگی.