طورخم بارڈر آج سے 24 گھنٹے کھلا رہے گا

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے طورخم بارڈر 24 گھنٹے کھولنے کیلئے تمام تر انتظامات مکمل کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ پہلی بار طورخم بارڈر کو 24 گھنٹوں کیلئے کھولا جارہا ہے اس لئے تمام متعلقہ ادارے بھر پور انتظامات یقینی بنائیں۔

انہوں نے آئندہ پیر سے بارڈر پر آزمائشی بنیادوں پر نائٹ آپریشن شروع کرکے رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی تاکہ انتظامات کا عملی طور پر جائزہ لیا جا سکے، 24 گھنٹوں کیلئے سروس کا باضابطہ اجراء وزیراعظم پاکستان خود کریں گے۔

اس ضمن میں وزیراعلیٰ ہاﺅس پشاور میں طورخم بارڈر کو 24 گھنٹوں کیلئے کھولنے کے حوالے سے انتظامات پر جائزہ اجلاس وزیر اعلیٰ محمود خان کی صدارت میں منعقد ہوا جس میں وزیرا طلاعات شوکت علی یوسفزئی، وزیراعلیٰ کے پرنسپل سیکرٹری شہاب علی شاہ، ڈپٹی کمشنر ، کسٹم حکام، این ایل سی کے نمائندگان اور دیگر متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔

اجلاس میں پاک افغان طورخم بارڈر کو 24 گھنٹے کھولنے کے حوالے سے حکومتی فیصلے پر عمل درآمد کیلئے انتظامات کا جائزہ لیا گیا جبکہ وزیراعلیٰ کو آگاہ کیا گیا کہ کسٹم اہلکاروں کی تعیناتی سمیت تمام تر انتظامات مکمل کرلئے گئے ہیں تاحال دو شفٹوں میں آپریشن جاری ہے۔

وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ رات کے اوقات میں بھی بارڈر کھلا رکھنے اور آپریشن یقینی بنانے کیلئے مناسب لائٹس کا بندوبست ہونا چاہیئے۔ اُنہوں نے کہاکہ حکومت نے ہر حال میں بارڈر کو 24 گھنٹے کھولنا ہے، تمام ادارے اپنی ذمہ داریاں پوری کریں۔

اُنہوں نے آزمائشی طور پر آئندہ پیر سے بارڈر پر نائٹ آپریشن شروع کرنے اور اُنہیں رپورٹ کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے عندیہ دیا کہ وہ پیر کے بعد کسی بھی رات کو بارڈر کا دورہ کریں گے اور انتظامات کا بذات خود جائزہ لیں گے۔

وزیراعلیٰ محمود خان نے کہا کہ صوبائی حکومت نے اس مقصد کیلئے وسائل فراہم کردیئے ہیں اب انتظامات میں کوئی کمی نہیں ہونی چاہیئے۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ طور خم بارڈر کے 24 گھنٹے کھلا رہنے سے تجارتی سرگرمیوں میں سرعت اور تیز ی آئے گی اور بارڈر پر تاجروں کو درپیش مسائل کا کل وقتی حل ممکن ہو گا۔