کشمیر آور کے تحت قبائلی عوام کا کشمیریوں سے یکجہتی

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

ملک کے دیگرحصوں کی طرح  وزیراعظم پاکستان عمران خان کے اعلان پر قبائلی اضلاع میں بھی لوگ کشمیری عوام سے یکجہتی کے لیے سڑکوں پرنکل آئے۔ قبائلی اضلاع کے عوام نے ریلیاں نکالی اور مقبوضہ کشمیرکے عوام پرجاری ظلم وستم کے خلاف نعرے لگائے۔

خیبر

ضلع خیبر کے تینوں بڑے بازاروں لنڈی کوتل، باڑہ اورجمرود بازاروں میں یکجہتی کشمیرریلیاں نکالی گئی۔ ڈپٹی کمشنر محموداسلم وزیر کی قیادت میں جمرود بازار میں ریلی نکالی گئی۔ ریلی میں قبائلی عمائدین مختلف سیاسی پارٹیوں کے کارکنوں نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔

شرکاء نے اے سی آفس سے تاریخی باب خیبر تک مارچ کیا ۔ شرکاء نے نہتے مظلوم کشمیریوں کے حق میں اور بھارتی جارحیت کے خلاف شدید نعرہ بازی کی۔ اس کے علاوہ اے سی لنڈی کوتل کی قیادت میں لنڈی کوتل بائی پاس سے حمزہ چوک تک مارچ کیا شرکاء نے قومی پرچم کے ساتھ ساتھ آزاد کشمیر کا پرچم بھی اٹھائے تھے۔ “مودی کا جو یار ہے غدار ہے غدارہے” کے نعرے بلند کئے۔

باڑہ بازار میں بھی تاجر یونین کی قیادت میں یکجہتی کشمیر ریلی نکالی گئی۔ شرکاء نے کشمیر کی آزادی تک جدوجہد جاری رہے گے کے نعرے لگائے۔ ریلیوں کے دوران شاہراہوں کو بند رکھا گیا۔

ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال لنڈی کوتل کے ایم ایس نیک داد آفریدی کی قیادت ڈاکٹروں کی کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے سلسلے میں احتجاجی ریلی نکالی گئی

باجوڑ

ملک بھر کی طرح قبائلی ضلع باجوڑ میں بھی کشمیریوں کیساتھ اظہار یکجہتی کیلئے ریلیاں نکالی گئی۔ مرکزی ریلی خاربازار میں منعقد ہوئی جس کی قیادت ڈپٹی کمشنر باجوڑ عثمان محسود اور ڈی پی او پیر شہاب علی شاہ نے کی۔

ضلع باجوڑ کے مختلف بازاروں خاربازار ،عنایت کلی بازار ، پھاٹک بازار ، راغگان بازار اور دیگر بازاروں میں تاجر برادری ، سول سوسائٹی ، سکولوں کے طلباء ،کالجز کے طلباء، سیاسی جماعتوں نے ریلیاں نکالی۔

خار بازار میں منعقدہ ریلی سے ڈی سی باجوڑ عثمان محسود ، پی پی پی باجوڑ کے صدر اورنگزیب انقلابی ، پی ٹی آئی باجوڑ کے صدر ڈاکٹر خلیل الرحمن ، خار بازار تاجربرادری کے صدر حاجی خان بہادر ، لاہور خان ، جمعیت علمائے اسلام کے قاری محسن ، پرائیوٹ ایجوکیشن نیٹ ورک باجوڑ کے صدر نورحمان اور دیگر نے خطاب کیا۔

ریلیوں سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ کشمیر پاکستان کا شہ رگ ہے۔ بھارتی حکومت اور مودی کےخلاف بھی شدید نعرہ بازی کی۔

مقررین نے کہا کہ اقوام متحدہ اور عالمی انسانی حقوق کے ادارے بھارتی مظالم پر خاموش تماشائی بنے بیٹھے ہیں انہوں نے اقوام متحدہ اور انسانی حقوق کے اداروں سے مطالبہ کیا کہ کشمیریوں پر بھارتی مظالم رکوائے۔

ضلع باجوڑ کے مین بازار خار میں کشمیریوں کیساتھ یکجہتی کیلئے ریلی نکالی گئی

 شمالی وزیرستان

شمالی وزیرستان کے ھیڈکواٹر میرانشاہ میں بھی کشمریوں کے ساتھ یوم یکجہتی ریلی نکالی گئی۔

ریلی میں انڈیا کے خلاف نعرے بازی کی گئی۔ مظاہرین نے بینرز اٹھا رکھے تھے جس پر کشمیر جل رہا ہے کے نعرے درج تھے۔ ریلی میں ڈی پی او شفیع اللہ گنڈاپور،ڈی سی عبدالناصر صاحب، اے ڈی سی منظور آفریدی،ڈی ایس پی سید جلال کے علاوہ سیول سوسائٹی کے اراکین،  قبائلی عمائدین اور سکول کے طلبہ اور ڈسٹرکٹ پولیس نے بھر پور حصہ لیا۔

ریلی نے گورنر ماڈل سکول سے نکل کر وزیرستان کے مختلف علاقوں سے گزر کرعیدک گیٹ کے سامنے جلسے کی شکل اختیار کی۔ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے ڈی پی او شفیع اللہ گنڈا پور نے کہا کہ پاکستانی عوام اور سرکاری ادارے متحد اور متفق ہیں ہر حالت میں کشمریوں کا ساتھ دیں گے۔

میرانشاہ میں بھی یکجہتی کشمیر ریلی نکالی گئی جس کی قیادت ڈپٹی کمشنر عبد الناصر خان کر رھے تھے

جنوبی وزیرستان

جنوبی وزیرستان کے ضلعی ہیڈکوارٹر وانا میں بھی کشمیروں کیساتھ اظہار یکجہتی ریلی کا انقعاد کیا گیا.

کشمیروں کیساتھ اظہار یکجہتی ریلی اسیسٹنٹ کمشنر وانا امیرنواز کی قیادت میں موسی نیکہ چوک سے وانا بائی پاس سے ہوتی ہوئی سکاوٹس کیمپ کے مرکزی گیٹ کے سامنے اختتام پذیر ہوئی.

کشمیروں کیساتھ اظہار یکجہتی ریلی میں ضلعی انتظامیہ سمیت مختلف مکتبہ فکر کے لوگ، سکول کے طلباء، اساتذہ، قبائلی عمائدین، علماء اور گورنمنٹ سرونٹس نے کثیر تعداد میں شرکت کی.

ریلی کے شرکاء نے بھارتی ظلم کیخلاف شدید نعرے بازی کی گی جبکہ قبائلی عوام کا کہنا ہے کہ مقبوضہ کشمیرپر غیرقانونی قبضہ ناقابل برداشت ہیں اور ہرمشکل حالات میں کشمیروں کیساتھ شانہ بشانہ کھڑے ہیں.

وانا کے مکینیوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ ملک کی دفاع کیلئے کسی قسم کے قربانی سے دریغ نہیں کرینگے.

جنوبی وزیرستان کے ضلعی ہیڈکوارٹر وانا میں کشمیروں کیساتھ اظہار یکجہتی سکاوٹس کیمپ کے مرکزی گیٹ کے سامنے اختتام پذیر ہوئی

ضلع کرم

ضلع کرم میں بھی مظلوم کشمیریوں کے ساتھ اظہار یک جہتی کے طور پر احتجاجی ریلیاں نکالی گئیں. مظلوم کشمیریوں کے ساتھ اظہار یک جہتی کے لئے پاراچنار شہر اور ضلع کرم کے دیگر چھوٹے بڑے قصبوں اور دیہاتوں میں احتجاجی ریلیاں نکالی گئیں.

گورنمنٹ پوسٹ گریجویٹ کالج پاراچنار اور اسرار شہید ہائی سکول سمیت صدہ بازار ، علی زئی ،ڈوگر اور دیگر علاقوں میں بھی بھر پور احتجاج کیا گیا.

ضلع کرم کے سکھ اور عیسائی برادری نے بھی احتجاجی ریلیاں نکالی اور کشمیر کے حق میں نعرے لگائے.

ممبر صوبائی اسمبلی اقبال سید میاں اور قبائیلی راہنما سردار حسین نے کشمیریوں پر مظالم کی کی مزمت کی نماز جمعہ کے خطبوں میں بھی کشمیریوں کے ساتھ ہونے والے مظالم کی مذمت کی گئی اور مرکزی امام بارگاہ پاراچنار سے بھی احتجاجی جلوس نکالا گیا. جس سے قبائلی عمائدین نے بھی خطاب کیا.

مختلف سیاسی سماجی اور مذہبی تنظیموں کے رہنماؤں نے احتجاجی مظاہرین سے اپنے خطاب میں کشمیریوں پر مظالم بند کرنے اور بین الاقوامی قوتوں سے انڈیا کے خلاف اقدامات اٹھانے کا مطالبہ کیا.

ضلع کرم میں بھی مظلوم کشمیریوں کے ساتھ اظہار یک جہتی کے طور پر گلی شہر شہر اور دیہاتوں میں بھی بھرپور احتجاج کیا گیا
ضلع مہمند
 
قبائلی ضلع مہمند میں کشمیری عوام کے ساتھ بھر پور انداز میں اظہار یکجہتی منایا گیا۔مختلف بازاروں میاں منڈی، یکہ غنڈ، آٹا، غلنئی اور لکڑوں بازار سمیت پشاور ٹو باجوڑ شاہراہ پر گاڑیوں کی آمد و رفت بند رہی۔ ضلع مہمند کے مرکزی بازار میاں منڈی میں احتجاجی ریلی ڈپٹی کمشنر افتخار عالم کی قیادت میں نکالی گئی۔
 
ریلی سے پہلے پاکستان کا قومی ترانہ اور کشمیر کے ساتھ اظہار یکجہتی کے ترانے بھی سنائے گئے۔ پورے علاقے کو پاکستان اور کشمیری پرچموں سے سجایا گیا تھا۔
 
اس موقع پر مظاہرین نے پاکستان زندہ باد، پاک فوج زندہ باد نعروں کے علاوہ کشمیر بنے گا پاکستان، کشمیر آزاد رہیگا کے نعرے لگائے گئے۔
آٹا بازار خویزئی سے حاجی احمد خویزئی اور محمد زمان کی قیادت میں جبکہ پاک افغان سرحدی علاقے سے ملک عبدالولی عرف ابوذر کی قیادت میں ریلیاں مرکزی بازار میاں منڈی پہنچ گئے۔