قبائلی اصلاع میں آئس نشہ کی سمگلنگ میں خطرناک حد تک اضافہ، عوام سڑکوں پر نکل آئی

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

خیبرپختونخوا کے قبائلی ضلع مہمند میں غیر سرکاری تنظیم (تکل فلاحی تنظیم) کے زیر اہتمام آئس نشے کے خلاف احتجاجی ریلی نکالی گئی۔

یہ احتجاجی ریلی آج 23 اگست کو ضلع مہمند کے علاقہ اتوخیل میں نکالی گئی جس میں شریک افراد نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اور بینرز اٹھا رکھیں تھے جن پر “آئس نشے کا کاروبار کرنے والے انسانیت کے قاتل ہیں” سمیت دیگر مختلف نعرے درج تھے۔

نمائندہ ٹربل پریس کے مطابق احتجاجی ریلی میں تکل فلاحی تنظیم کے عہدیداروں سمیت علاقے کے مشران اور عام افراد نے کثیر تعداد میں شرکت کیں، شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے ملک ستار خان نے کہا کہ  ضلع مہمند میں آئس نشے کے استعمال میں تشویشناک حد تک اضافہ ہورہا ہے جو ہمارے اور ہماری نوجوان نسل کےلئے تباہی کا سبب بن رہا ہے۔

تنظیم کے صدر رحمت اللہ لیوال نے ریلی شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ضلع مہمند اور بالخصوص کمالی خلیمزئی میں آئس کے ڈیلرز مختلف راستوں سے اس نشے کو سمگل کررہے ہیں، ہم انتظامیہ سے درخواست کرتے ہیں کہ وہ اس ناسور کے خلاف فوری طور پر کارروائی کرے بصورت دیگر بعد میں اس پر قابو پانا مشکل ہوجائے گا۔